Namaz e Nabvi

Namaz e nabvi
Facebooktwitterredditpinterestlinkedinmailby feather

The importance of prayer (salah) in Islam cannot be understated. It is the first pillar of Islam that the Prophet (PBUH) mentioned after mentioning the testimony of faith, by which one becomes a Muslim. It was made obligatory upon all the Prophets and people. Allah has declared its obligatory status under majestic circumstances. For example, when Allah spoke directly to Moses, He said:

إِنَّنِیۤ أَنَا ٱللَّهُ لَاۤ إِلَـٰهَ إِلَّاۤ أَنَا۠ فَٱعۡبُدۡنِی وَأَقِمِ ٱلصَّلَوٰةَ لِذِكۡرِیۤ

‘It is truly I. I am Allah! There is no god ˹worthy of worship˺ except Me. So worship Me ˹alone˺, and establish prayer for My remembrance

(طه: 14)

Similarly, the prayers were made obligatory upon the Prophet Muhammad (PBUH) during his ascension to heaven. Furthermore, when Allah praises the believers, such as at the beginning of surah al-Muminoon, one of the first descriptions He states is their adherence to the prayers.

men praying

The importance of salah is demonstrated in many of the Prophet’s (PBUH) statements. For example, the Prophet (PBUH) said:

مَن حافظ عليها [يعني الصلاةَ] كانت له نورًا وبرهانًا ونجاةً يومَ القيامةِ، ومن لم يحافظْ عليها لم تكنْ له نورًا ولا برهانًا ولا نجاةً، وحُشِرَ يومَ القيامةِ مع فرعونَ وهامانَ وقارونَ وأُبَيِّ بنِ خلَفٍ

“Whoever preserves it [meaning prayer] will have light, proof and deliverance on the Day of Resurrection, and whoever does not preserve it will have no light, proof, or salvation and he will be gathered with Pharaoh, Qaroon Haman and Ubai bin Khalf.”

(مسند أحمد: 6576)

The importance of the prayers (salah) lies in the fact that no matter what actions one performs in his life, the most important aspect is one’s relationship to Allah, that is, one’s faith (imaan), God-consciousness (taqwa), sincerity (ikhlas) and worship of Allah (`ibaadah). This relationship with Allah is both demonstrated and put into practice, as well as improved and increased, by the prayer. Therefore, if the prayers are sound and proper, the rest of the deeds will be sound and proper; and if the prayers are not sound and proper, then the rest of the deeds will not be sound and proper, as the Prophet (PBUH) himself stated:

إِنَّ أَوَّلَ مَا يُحَاسَبُ بِهِ الْعَبْدُ بِصَلاَتِهِ فَإِنْ صَلَحَتْ فَقَدْ أَفْلَحَ وَأَنْجَحَ وَإِنْ فَسَدَتْ فَقَدْ خَابَ وَخَسِرَ‏ فَإِنِ انْتَقَصَ مِنْ فَرِيضَتِهِ شَىْءٌ قَالَ انْظُرُوا هَلْ لِعَبْدِي مِنْ تَطَوُّعٍ فَيُكَمَّلُ بِهِ مَا نَقَصَ مِنَ الْفَرِيضَةِ ثُمَّ يَكُونُ سَائِرُ عَمَلِهِ عَلَى نَحْوِ ذَلِكَ

“The first thing for which a person will be brought to account will be his Salah. If it is sound then he will have succeeded, be salvaged, but if it is not then he will have lost and be doomed. If anything is lacking from his obligatory prayers, He will say: ‘Look and see whether My slave has any voluntary prayers to make up for what is deficient from his obligatory prayers.’ Then all of his deeds will be dealt with in like manner.”

(سنن النسائي: 465)

In reality, the salah that is performed properly – with true remembrance of Allah will have a lasting effect on the person. After he finishes the prayer, his heart will be filled with the remembrance of Allah. He will be fearful as well as hopeful of Allah. After that experience, he will not want to move from that lofty position to one wherein he disobeys Allah. Allah has mentioned this aspect of the prayer when He said:

وَأَقِمِ ٱلصَّلَوٰةَ إِنَّ ٱلصَّلَوٰةَ تَنۡهَىٰ عَنِ ٱلۡفَحۡشَاۤءِ وَٱلۡمُنكَرِ

and establish prayer. Indeed, prayer should deter from indecency and wickedness.

(العنکبوت: 45)

women praying

The overall effect that a properly performed prayer (salah) should have upon humans is described in other verses in the Quran:

إِنَّ ٱلۡإِنسَـٰنَ خُلِقَ هَلُوعًا . إِذَا مَسَّهُ ٱلشَّرُّ جَزُوعࣰا . وَإِذَا مَسَّهُ ٱلۡخَیۡرُ مَنُوعًا . إِلَّا ٱلۡمُصَلِّینَ . ٱلَّذِینَ هُمۡ عَلَىٰ صَلَاتِهِمۡ دَاۤىِٕمُونَ

“Verily, man was created impatient, irritable when evil touches him and niggardly when good touches him. Except for those devoted to prayer those who remain constant in their prayers…”

(المعارج: 19-23)

As for the Hereafter, Allah’s forgiveness and pleasure is closely related to salah. The Messenger of Allah (PBUH) said:

 خَمْسُ صَلَوَاتٍ افْتَرَضَهُنَّ اللَّهُ تَعَالَى مَنْ أَحْسَنَ وُضُوءَهُنَّ وَصَلاَّهُنَّ لِوَقْتِهِنَّ وَأَتَمَّ رُكُوعَهُنَّ وَخُشُوعَهُنَّ كَانَ لَهُ عَلَى اللَّهِ عَهْدٌ أَنْ يَغْفِرَ لَهُ وَمَنْ لَمْ يَفْعَلْ فَلَيْسَ لَهُ عَلَى اللَّهِ عَهْدٌ إِنْ شَاءَ غَفَرَ لَهُ وَإِنْ شَاءَ عَذَّبَهُ 

Allah, the Exalted, has made five prayers obligatory. If anyone performs ablution for them well, offers them at their (right) time, and observes perfectly their bowing and submissiveness in them, it is the guarantee of Allah that He will pardon him; if anyone does not do so, there is no guarantee for him on the part of Allah; He may pardon him if He wills, and punish him if He wills.

(سنن أبي داود: 425)

The prayers (salah) are a type of purification for a human being. He turns and meets with his Lord five times a day. As alluded to above, this repeated standing in front of Allah should keep the person from performing sins during the day. Furthermore, it should also be a time of remorse and repentance, such that he earnestly asks Allah for forgiveness for those sins that he committed. In addition, the salah in itself is a good deed that wipes away some of the evil deeds that he performed. These points can be noted in the following hadith of the Prophet (PBUH):

أَرَأَيْتُمْ لَوْ أَنَّ نَهَرًا بِبَابِ أَحَدِكُمْ، يَغْتَسِلُ فِيهِ كُلَّ يَوْمٍ خَمْسًا، مَا تَقُولُ ذَلِكَ يُبْقِي مِنْ دَرَنِهِ ‏”‏‏.‏ قَالُوا لاَ يُبْقِي مِنْ دَرَنِهِ شَيْئًا‏.‏ قَالَ ‏”‏ فَذَلِكَ مِثْلُ الصَّلَوَاتِ الْخَمْسِ، يَمْحُو اللَّهُ بِهَا الْخَطَايَا

If there was a river at the door of any of you and he took a bath in it five times a day would you notice any dirt on him?” They said, “Not a trace of dirt would be left.” The Prophet (PBUH) added, “That is the example of the five prayers with which Allah blots out (annuls) evil deeds.

(صحيح البخاري: 528)

In another hadith, the Prophet (peace be upon him) said:

الصَّلَوَاتُ الْخَمْسُ وَالْجُمُعَةُ إِلَى الْجُمُعَةِ وَرَمَضَانُ إِلَى رَمَضَانَ مُكَفِّرَاتٌ مَا بَيْنَهُنَّ إِذَا اجْتَنَبَ الْكَبَائِرَ

The five (daily) prayers and from one Friday prayer to the (next) Friday prayer, and from Ramadan to Ramadan are expiations for the (sins) committed in between (their intervals) provided one shuns the major sins

(صحيح مسلم: 233)

The Holy Prophet Muhammad (PBUH) commanded us:

صَلُّوا كَمَا رَأَيْتُمُونِي أُصَلِّي 

Pray as you have seen me praying.

(صحيح البخاري: 631)

He (PBUH) also said to Sahabi (one companion) who did not perform his prayer (salah) correctly and according to the Sunnah and He (PBUH)ْ was observing his mistakes:

ارْجِعْ فَصَلِّ فَإِنَّكَ لَمْ تُصَلِّ

Go back and pray again for you have not prayed

(صحیح البخاري: 793)

He (PBUH) sent this companion back three times to go and pray again. At last the man said, “By Him Who has sent you with the truth! I do not know a better way of praying. Kindly teach Me how to pray”. Then the Holy Prophet (PBUH) taught him how to pray which is acceptable to Allah Almighty.

This incident clearly indicates that it’s not just performing prayers which is important but we also have to be careful and make sure our prayers are according to the sunnah or they may not be accepted. 

Are you sure you are praying according to Sunnah without making a mistake in it? Many of the people are unfamiliar with their mistakes and think they are praying correctly without knowing the Prophet’s (PBUH) method of Prayer. Since prayer is obligatory on every Muslim, it is also obligatory on every Muslim to learn its method.

So how do you learn prayer according to the sunnah? According to the command of the Prophet (PBUH), prayers should be performed in the same way as the Prophet (PBUH) performed them. From the Quran and the authentic hadith, we can better understand what that method exactly is.

Dr. Shafiqu ur Rehman, a prominent religious scholar of Pakistan, has written this book entitled Namaz e Nabvi to the benefit of the Ummah. The warnings about the Sahi and the Dhaif Hadith are also highlighted by Sheikh Zubair Ali Zai رحمه الله. Also very useful scholarly additions of other eminent religious scholars Hafiz Salahuddin Yusuf, Maulana Abdul Samad Rafiqi رحمهما الله and Maulana Abdul Wali Khan حفظه الله have also been added in this book.

Namaz e nabvi

 This book is also available in the English language by the name of “Prayers according to the Sunnah”.

prayer according to sunnah

 This particular prayer book is unique on account of the following characteristics:

  • The most authentic and comprehensive book on the topic of Prayer (Salah)
  • The book is full of references from the Quran and Hadith. These references are mentioned in the footnotes.
  • Many useful and important issues regarding Salah like “Taharah” (Purification), women’s specific issues of Taharah, Issues of ablution, rules of the mosque, prayer times, all nawafil prayers, and issues of funeral prayers have been collected as well.
  • It is the encyclopedia of Salah where the issues of Salah (Prayer) have been explained in the light of the Quran and Hadith instead of any jurisprudential religion.
  • The most popular book in Pakistan and India due its easy to understand language.
namaz e nabvi

This book is so comprehensive and authoritative on its subject that it has been introduced on “Abb Takk” news channel in Pakistan with reference to a standard, authentic, comprehensive and non-sectarian book on the topic of the Prayer.

Let’s take a look at the table of contents to get a better idea regarding the topics covered in this book.

عرض ناشر
ابتدائیہ
مقدمۃ التحقیق (جدید ایڈیشن)
اکاذیب
موضوع احادیث (من گھڑت روایتیں)
ضعیف روایات-
تناقضات
کتاب وسنت کی اتباع کا حکم
حدیث کے معاملے میں چھان بین اور احتیاط
خطبۂ رحمۃ للعالمین ﷺ

*Complete table of Contents is mentioned at the end of the blog.

As seen from the table of contents the subject matter of the book is quite comprehensive and detailed. Below we have included some extracts from the book.

Extract 01: Read the extract to understand the purity of water for ablution

پانی کے احکام

نماز کے لیے وضو شرط ہے۔ وضو کے بغیر نماز قبول نہیں ہوتی۔ اسی طرح وضو کے لیے پانی کا پاک ہونا شرط ہے۔

سیدنا ابو سعید خدری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ سے سوال کیا گیا: کیا ہم بضاعہ کے کنویں سے وضو کر سکتے ہیں۔ یہ ایسا کنواں ہے جس میں حیض والے کپڑے، کتوں کا گوشت اور بدبودار اشیاء (بعض اوقات) گر جاتی ہیں۔ بضاعہ کا کنواں ڈھلوان پر تھا اور بارش وغیرہ کا پانی ان چیزوں کو بہا کر کنویں میں لے جاتا تھا۔ نبیٔ اکرم ﷺ نے فرمایا:

(( اَلْمَاءُ طَهُورٌ لَّا يُنَجِّسُهُ شَيْءٌ ))

’’ اس کا پانی پاک ہے (اور اس میں دوسری چیزوں کو پاک کرنے کی صلاحیت ہے۔) اسے کوئی چیز ناپاک نہیں کرتی۔ ‘‘ 

معلوم ہوا کہ کنویں کا پانی پاک ہے۔

Extract 02: Read the extract to learn about the ruling on adhan and prayers during travels

سفر میں اذان اور جماعت

سیدنا مالک بن حویرث رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ دو آدمی (میں اور میرا چچا زاد بھائی) آپ ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوئے تو آپ نے فرمایا: ’’جب تم سفر پر جاؤ تو اذان اور اقامت کہو، پھر تم میں سے جو بڑا ہو، وہ امامت کروائے۔

As you can see from the above extracts, the book is quite comprehensive and other than explaining the process of prayer and ablution it also highlights common questions that people may have in regards to prayer. Namaz e Nabvi is a complete encyclopedia on prayers and a must-read for all Muslims.

The book can be bought online by clicking here.

Interest in similar books? Take a look at these suggestions.

*Complete Table of Contents

نماز: فرضییت، فضیلت اور اہمیت
اولاد کو نماز سکھانے کا حکم
ترک نماز، کفر کا اعلان ہے
فضیلت نماز
نمازی اور شہید
اہمیت نماز
احکام طہارت
پانی کے احکام
رفع حاجت کے آداب ومسائل
بیت الخلا میں جاتے وقت کی دعا
بیت الخلا سے نکلتے وقت کی دعا
رفع حاجت کے مسائل
پیشاب کے چھینٹوں سے بچنے کی سخت تاکید
نجاستوں کی تطہیر کا بیان
حیض آلود کپڑے کا حکم
منی کا دھونا
شیر خوار بچے کا پیشاب
نجاست آلود جوتا
کتے کا جھوٹا
مردار کا چمڑا
بلی کا جھوٹا
سونے چاندی کے برتن میں کھانا
جنابت اور حیض سے متعلقہ احکام ومسائل
صحبت اور غسل جنابت
عورت کو بھی احتلام ہوتا ہے
جنبی عورت کے بالوں کا مسئلہ
جنبی سے میل جول اور مصافحہ جائز ہے
حائضہ سے جماع کرنے کی ممانعت
مذی کے خارج ہونے سے غسل واجب نہیں ہوتا
مذی، منی اور ودی میں فرق
سیلان رحم موجب غسل نہیں
حائضہ کو چھونا اور اس کے ساتھ کھانا جائز ہے
جنبی کے قرآن پڑھنے کی کراہت
کیا حائضہ قرآن کی تلاوت کر سکتی ہے؟
استحاضہ کا مسئلہ
حائضہ کے لیے نماز اور روزے کی ممانعت
نفاس کا حکم
غسل کا بیان
غسل جنابت کا طریقہ
دیگر غسل
جمعہ کے دن غسل
میت کو غسل دینے والا غسل کرے
نو مسلم کے لیے غسل
عیدین کے روز غسل
مکے میں داخل ہوتے وقت غسل کرنا
مسواک کا بیان
وضو کا بیان
نیند سے جاگ کر پہلے ہاتھ دھونا
تین بار ناک جھاڑنا
مسنون وضو کی مکمل ترتیب
تنبیہات
وضو کے بعد کی مسنون دعائیں
وضو کی خود ساختہ دعائیں
وضو کے دیگر مسائل
مسنون وضو سے گناہوں کی بخشش
خشک ایڑیوں کو عذاب
وضو سے بلندیٔ درجات
تحیۃ الوضو پڑھنے کی فضیلت
ایک وضو سے کئی نمازیں ادا کرنا
دودھ پینے سے کلی کرنا
موزوں وغیرہ پر مسح کے متعلق احکام ومسائل
جرابوں پر مسح کرنے کا بیان
صحابہ رضی اللہ عنھم کا جرابوں پر مسح کرنا
لغت عرب سے ’’جورب‘‘ کی معنی
پگڑی پر مسح
نواقض وضو
مذی خارج ہونے سے وضو
شرمگاہ کو ہاتھ لگانے سے وضو
نیند سے وضو
ہوا خارج ہونے سے وضو
قے، نکسیر اور وضو
تیمم کا بیان
جنابت کی حالت میں تیمم
تیمم کا طریقہ
نمازی کا لباس
مساجد کے احکام
مسجد کی فضیلت
بعض مساجد میں نمازوں کا ثواب
تحیۃ المسجد (مسجد کا تحفہ)
پیاز اور لہسن کھا کر مسجد میں آنے کی ممانعت
مسجد میں تھوکنا
مسجد میں سونا
مسجد میں خرید وفروخت
مسجد میں جانے کی فضیلت
مسجد سے دل لگانے والے کے لیے عظیم خوشخبری
مساجد میں خوشبو کا اہتمام کرنا
مسجد میں آ کر نماز ادا کرنے والوں کے لیے خوشخبری
مسجد کی خبر گیری کرنے والا مومن ہے
قبرستان اور حمام میں نماز پڑھنے کی ممانعت
مسجد میں داخل ہونے کی دعا
مسجد سے نکلنے کی دعا
مسجد میں بلند آواز سے باتیں کرنا منع ہے
اوقاتِ نماز
نماز پنجگانہ کے اوقات
نماز فجر اندھیرے میں پڑھنی چاہیے
گرمی اور سردی کے موسم میں نماز ظہر کے اوقات
نماز جمعہ کا وقت
نماز عصر کا وقت
نماز مغرب کا وقت
نماز عشاء کا وقت
ائمۂ مساجد کو نماز اول وقت میں پڑھانی چاہیے
نماز کے ممنوعہ اوقات
فوت شدہ نمازوں کا حکم
سفر میں اذان دے کر نماز پڑھنا
نمازیں مجبورا فوت ہو جائیں تو کیسے پڑھیں؟
اذان واقامت
اذان کی ابتدا
اذان کے جفت کلمات
فجر کی اذان
اقامت کے طاق کلمات
دوہری اذان
اذان اور مؤذن کے فضائل
اذان کا جواب دینا
اذان کے بعد کی دعائیں
وسیلے کی تشریح
دعائے اذان میں خود ساختہ کلمات کے اضافے کی حقیقیت
اذان اور اقامت کے دیگر مسائل
قبلہ اور سترہ
احکام قبلہ
سترے کا بیان
نمازی کے آگے سے گزرنے کا گناہ
نماز با جماعت
اہمیت
عورتوں کو مسجد میں آنے کی اجازت
نماز باجماعت کے متفرق مسائل
صفوں میں مل کر کھڑا ہونے کا حکم
صفوں کی ترتیب
ستونوں کے درمیان صف بنانا
صف کے پیچھے اکیلے نماز پڑھنا
صف بندی میں مراتب کا لحاظ رکھنا
امامت کا بیان
زیادہ لمبی نماز پر نبیٔ کریم ﷺ کا غصہ
نماز کے لیے پرسکون انداز سے آںا
اماموں پر وبال
نماز پڑھا کر امام مقتدیوں کی طرف منہ پھیرے
امام کی اقتدا کے احکام
امام کو لقمہ دینا
عورت کی امامت
امامت کے چند مسائل
نمازِ نبوی: تکبیر اولیٰ سے سلام تک
گیارہ صحابۂ کرام رضی اللہ عنھم کی شہادت
نماز کی نیت
قیام
تکبیر اولیٰ
سینے پر ہاتھ باندھنا
عورتوں اور مردوں کی ہیئتِ نماز میں کوئی فرق نہیں
سینے پر ہاتھ بندھنے کے بعد کی دعائیں
نماز اور سورۂ فاتحہ
آمین کا مسئلہ
آدابِ تلاوت
نماز کی مسنون قراءت
سورۂ اخلاص کی اہمیت
نماز جمعہ اور عیدین میں تلاوت
جمعے کے دن نماز فجر میں تلاوت
نماز فجر میں تلاوت
عصر و ظهر کی نماز میں قراءت
نماز مغرب میں قراءت
نماز عشاء میں قراءت
مختلف آیات کا جواب
نماز میں شیطانی وسوسے کا علاج
نماز میں رونا
رفع الیدین
رفع الیدین نہ کرنے والوں کے دلائل کا تجزیہ
رکوع کا بیان
رکوع کی دعائیں
اطمینان، نماز کا رکن ہے
قومے کا بیان
سجدے کے احکام
عورتیں بازو نہ بچھائیں
سجدہ،قرب الٰہی کا باعث
سجدہ جنت میں داخلے کا باعث ہے
لمبا سجدہ کرنا
کثرتِ سجود،بہشت میں رسول اللہ ﷺ کی رفاقت کا باعث
سجدے کی رعائیں
درمیانی جلسہ ( دو سجدوں کے درمیان بیٹھنا )
جلسے کی مسنون دعائیں
دوسرا سجدہ
جلسۂ استراحت
دوسری رکعت
پہلا تشہد
مسئلۂ رفع سبابہ
آخری قعدہ ( تشہد )
درود کے بعد دعائیں
نماز کا اختتام
چند مزید احکام
سجدۂ سہو کا بیان
تین یا چار رکعات کے شک پر سجدہ
قعدۂ اولیٰ کے ترک پر سجدہ
نماز سے فارغ ہو کر باتیں کر لینے کے بعد سجدہ
چار کی جگہ پانچ رکعات پڑھ لینے پر سجدہ
نماز کے بعد مسنون اذکار
تنبیہ: دعائے رسول ﷺ میں اضافہ
آیۃ الکرسی
فرض نماز کے بعد اجتماعی دعا
سنتوں کا بیان
مؤکدہ سنتیں اور ان کی فضیلت
رسول اللہ ﷺ سنتیں گھر میں پڑھتے تھے
رمؤکدہ سنتیں
مغرب سے پہلے دو رکعتیں
جمعے کے بعد کی سنتیں
فجر کی سنتوں کی فضیلت
فجر کی سنتیں فرضوں کے بعد پڑھنے کا جواز
نمازوں کی رکعات
تہجد،قیام اللیل،قیام رمضان اور وتر
فضیلت
نبئ رحمت ﷺ کا شکر کرنے کا انداز
نیند سے بیدار ہونے کی دعا
تہجد کی دعائے استفتاح
رسول اللہ ﷺ کی نمازِتہجد کی کیفیت
آپ ﷺ کی تین دعائیں
رسول اللہ ﷺ کی نمازشب کا معمول
قیام اللیل کا طریقہ
پانچ، تین اور ایک وتر
تین وتروں کی قراءت
وتروں کے سلام کے بعد کی دعا
دعائے قنوت
تنبیہات
قنوت نازلہ
قیامِ رمضان
رسول اللہ ﷺ نے تین راتیں باجماعت قیام رمضان کیا
رمضان میں تہجد اور تراویح ایک ہی نماز ہے
قیام رمضان: گیارہ رکعات
سحری اور نماز فجر کا درمیانی وقفہ
نمازِسفر
قصر کی حد
سفر میں اذان اور جماعت
سفر میں دو نمازیں جمع کرنا
سفر میں سنتیں معاف ہیں
حضر میں دو نمازوں کا جمع کرنا
نمازجمعہ
جمعہ کے دن کی فضیلت
جمعہ کی فرضیت
جمعے کے متفرق مسائل
دوران خطبہ میں دو رکعتیں پڑھ کر بیٹھنا
گردنیں پھلانگنے کی ممانعت
جمعے کے لیے پہلے آنے والوں کا ثواب
خطبۂ جمعہ کے مسائل
ظہر احتیاطی بدعت ہے
محض جمعے کے دن روزہ رکھنا
جمعہ کی اذان
نمازِعیدین
احکام و مسائل
عورتوں کے لیے عیدگاہ میں آنے کا حکم
تکبیرات عید کا وقت
نمازِعید کا طریقہ
عید سے متعلقہ مسائل
نماز کسوف: سورج اور چاند گرہن کی نماز
سورج اور چاند گرہن کی نماز کا طریقہ
نماز استسقا
نماز اشراق
نماز استخارہ کا بیان
نماز تسبیح
احکام الجنائز
بیمارپرسی
عیادت کی دعائیں
تجہیزوتکفین
عالم نزع میں تلقین
موت کی آرزو کرنا
خودکشی سخت گناہ ہے
میت کو بوسہ دینا
میت کا غسل
میت کا کفن
میت کا سوگ
میت پر رونا
تعزیت کے مسنون الفاظ
نماز جنازہ
جنازے میں سورۂ فاتحہ
پہلی دعا
دوسری دعا
تیسری دعا
جنازے کے مسائل
غائبانہ نمازِجنازہ
قبرپرنمازِجنازہ
تدفین و زیارت
قبروں کو پختہ بنانے کی ممانعت
قبروں کی زیارت
زیارت قبور کی دعائیں
دیگر نمازیں
نمازتوبہ
لیلۃ القدر کے نوافل
پندرھویں شعبان کے نوافل
کلمۂ اختتام

Facebooktwitterredditpinterestlinkedinmailby feather

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here